کوئٹہ میں مون سون کی پہلی طوفانی بارش وژالہ باری نے تباہی مچادی،متعددہلاک وزخمی
وادی کوئٹہ میں مون سون کی پہلی طوفا نی بارش اور ژالہ باری نے شہر بھر میں تباہی مچا دی جس کی وجہ
سے دو بچے جاں بحق جبکہ 10 افراد زخمی ہو گئے ۔ایک شخص کو برساتی نالے سے زندہ نکالا گیا
زیادہ بارش اور ژالہ باری کی وجہ سے کوئٹہ شہر میں بجلی ومواصلاتی نظام درہم برہم ہو گیا ۔کوئٹہ شہر کی
تمام سڑکیں نالوں کی طرح نظر آنے لگی سول ہسپتال کوئٹہ شہر سمیت شہر کے اکثر علاقوں
میںمکانات میں پانی داخل ہو گیا۔سول ہسپتال مےںپانی داخل ہونے سے مریضوں کو شید ید
مشکلات کا سا منا کرنا پڑا بارش کی وجہ سے شہر میں23 فیڈر مکمل طور پر فیل ہو گیا اور بجلی کی فراہمی
معطل ہو کررہ گئی ۔تفصیلات کے مطا بق وادی کوئٹہ میںپیر کی شام سخت بارش اور ژالہ باری ہوئی
جو مسلسل ایک گھنٹے تک ہوتی رہی جس کی وجہ سے کوئٹہ شہرمیں کاروبار زندگی رک گئی ہے اور
پہاڑوں پر شید ید بارش کی وجہ سے پانی شہروں میں داخل ہو نے لگاجس کی وجہ سے شہر کی تمام
سڑکیںپرنس روڈ،لیاقت بازار،جناح روڈ،سول ہسپتال ،امداد چوک ،ڈبل روڈ سمیت دیگر
علاقوں میں سیلابی پانی گھروں میں دا خل ہو گیا جس کی وجہ سے روزہ داروں کوشید ید مشکلات کا
سامنا کر نا پڑا۔ شید ید بارش کی وجہ سے شہر کے مختلف علاقوں نوا ںکلی، بلبلی، ہدہ،سریاب ،ہزارگنجی
سمیت دیگرعلاقوں میں مکانات اوردیواریں گرنے سے دوبچے اصغراورمحمداشرف موقع پر
جان بحق ہو گئے جبکہ 10سے زایدافرادزخمی ہوگے جبکہ کئی علاقوں میں سیکڑوں مکانات گرگے۔
بارش کی وجہ سے شہرکے زےادہ ترعلاقوں میں بجلی چلی گی اور شہرکے 13فیڈرمیں کئی گھنٹے تک بجلی
کی فراہی بحال نہ ہو سکی ۔۔